نہریں نا بنائیں، محبت بڑھائیں

پولینڈ کے ماحول دوست شہری ان دنوں ایک نہر کی تعمیر کے خلاف احتجاج جاری رکھے ہوئے ہیں. اس نہر کی تعمیر پر یورپی یونین بھی تشویش کا اظہار کر چکی ہے.پولینڈ کی ماحول دوست خاتون ورکر مائرا وائسکوووچ نے جمعہ چودہ فروری کا ویلنٹائن ڈے اپنے بستر پر آرام کرتے گزارا. ان کا یہ آرام دہ بستر ان کے اپارٹمنٹ کے اندر موجود نہیں تھا بلکہ کھلی زمین پر تھا. مائرا نے اپنا بستر ایک مجوزہ نہر کے متعین کردہ علاقے پر بچھا رکھا تھا. اس نہر کو پولستانی حکومت تعمیر کرنے کی منصوبہ بندی کیے ہوئے ہے. مائرا وائسکووچ کے بستر پر ایک اور ماحول دوست کارکن روڈولف روباک بھی موجود تھے. اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مائرا کا کہنا تھا کہ کھردری اور سخت زمین پر بستر بچھا کر حکومت کے ایک غیرقانونی اقدام کا محبت سے جواب دیا گیا ہے. 


مائرا نے اپنی گفتگو میں اپنے ملک پولینڈ کی نوبل انعام یافتہ ادیبہ و شاعرہ اولگا توکارچسک کے ایک بیان کا حوالہ بھی دیا، '' فطرت کا احترام نہ کرنے سے انجام کار پر لالچی افعال ناکامی سے ہمکنار ہوتے ہیں. ‘‘ پولستانی ناول نگار مزید کہتی ہیں کہ پائیدار تخیل کی کمیابی، نہ ختم ہونے والا مسابقتی عمل اور غیر ذمہ دارانہ رویوں سے دنیا ٹکڑوں میں منقسم ہو چکی ہے. مائرہ کے مطابق اُن کی نسل کو اسی صورت حال کا سامنا ہے. نوبل انعام یافتہ ادیبہ اولگا توکارچسک بھی موجودہ قدامت پسند حکمران سیاسی جماعت 'لا اینڈ جسٹس پارٹی‘ کی داخلی پالیسیوں سے نالاں ہیں اور اکثر و بیشتر تنقید کرتی رہتی ہیں. مائرا وائسکووچ 'وسٹولا اسپلٹ‘ نامی احتجاجی سلسلے کی منتظمین میں شامل ہیں. وسٹولا اسپلٹ پولینڈ کی مشرقی ساحلی سمندری علاقے کی تنگ سی پٹی ہے جو بحیرہ بالٹک کے خلیج گڈانسک کے کناروں پر ہے. یہ ساحلی پٹی پچپن کلومیٹر طویل اور دو کلومیٹر سے بھی کم چوڑی ہے. اس کے ایک جانب پولینڈ کا جنگلاتی وسٹولا لاگون ہے اور دوسری جانب روسی علاقہ کالینن گراڈ ہے. پولستانی علاقہ گھنے جنگلوں سے بھرا ہے اور مشہور سیاحتی مقامات کا حامل ہے. حکومت اس علاقے میں نہر کھودنا چاہتی ہے. وارسا حکومت اس نہر کو ملکی اقتصاد اور سکیورٹی کے لیے انتہائی اہم خیال کرتی ہے. اس نہر کی تعمیر سے پولینڈ کو بحیرہ بالٹک تک براہ راست رسائی حاصل ہو جائے گی. ابھی تک سمندر تک رسائی ایک روسی چینل سے ممکن ہے. لا اینڈ جسٹس پارٹی روسی پالیسوں سے پریشان دکھائی دیتی ہے. 

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے